باڈی بلڈنگ کے دوران کن چیزوں کے بارے میں احتیاط سے کا م لینا چاہیئے؟

اگر ہم 1950-1940ء کی دہائیوں کے معروف چیمپئن کی تصاویر دیکھیں اور آج کے چیمئن کا ان سے مقابل کریں تو بہت واضح فرق محسوس ہوتا ہے۔آج کے باڈی بلڈرزصرف اور صرف اپنے پٹھوں(مسلز ) کو خوبصورت اور بڑا کرتے ہیں۔جو کہ دیکھنے کے تو قابل ہیں مگر ان میں سختی(ہارڈنس)،مزاحمت اور قوت برداشت کا خاصا فقدان نظر آتا ہے۔جبکہ ماضی کے باڈی بلڈر زمکمل فٹنس کو مدنظر رکھتے ہوئے اپنے جسم کے تمام اعضاء کی قوت برداشت کو بڑھاتے تھے۔نامور باڈی بلڈرز ایک تجربہ کار اور کامیاب باڈی بلڈر تھے۔
باڈی بلڈنگ اگر باقاعدہ اور مناسب طریقے سے سر انجام دی جائے تو اس کے برے اثرات نہ ہونے کے برابر ہوتے ہیں لیکن بعض باڈی بلڈرز ورزش اور خوراک کی بےقاعدگی کی وجہ سے اپنی صحت مزید خراب کر لیتے ہیں۔کیونکہ کسی بھی کام یا مشق میں بے قاعدگی سے صحت پر برے اثرات مرتب ہوتے ہیں۔غلط طریقے سے باڈی بلڈنگ کرنے کے کیا مضر اثرات ہو سکتے ہیں ان پر ایک نظر ڈالتے ہیں۔
– دوران باڈی بلڈنگ اگر مناسب غذاء اور خوراک کا استعمال نہ کیا جائے تو جسم میں انرجی کی شدید کمی ہو جاتی ہے اور وزن میں بھی واضح طور پر کمی واقع ہو جاتی ہے۔
– باڈی بلڈنگ میں بعض اوقات اعصاب میں کھنچاؤ پیدا ہو جاتا ہے جو بعد میں مزید پیچیدگیوں کا باعث بنتا ہے۔
– باڈی بلڈنگ کی مشقوں کے غیر مناسب طریقوں سے مسلز کی نشو نما بعض اوقات رک جاتی ہے۔جس کی وجہ سے اکثر باڈی بلڈرز قد کے چھوٹے رہ جاتے ہیں یعنی ان کا قد بڑھنا رک جاتا ہے۔
– باڈی بلڈرز ورزش کی سخت مشقوں سے جسمانی تھکاوٹ کا بہت زیادہ شکار ہو جاتے ہیں اور انہیں معمول سے زیادہ آرام اور خوراک کی ضرورت پڑتی ہے مگر ان دونوں میں سے کسی ایک کے فقدان سے صحت پر منفی اثرات مرتب ہوتے ہیں۔
– دوران باڈی بلڈنگ بعض لوگ مختلف قسم کی ادویات،ہارمونز اور فوڈ سپلیمنٹ استعمال کرتے ہیں جس کی وجہ سے وقتی طور پرتو جسم کے مسلز ابھرتے ہیں،لیکن باڈی بلڈنگ کے بعد جسم کو وہی معمول کی ورزش نہ ملنے کی وجہ سے مضر اثرات کا سامنا کرنا پڑتاہے۔بعض باڈی بلڈرز جو ادویات کا سہارا لیتے ہیں ان کا جسم باڈی بلڈنگ کے بعد بالکل موٹا ہو جاتا ہے اور وزن بھی بڑھ جاتا ہے اور اس طرح وزن بڑھنے سے کئی طرح کے امراض جنم لیتے ہیں۔
– اگر پانی پینے کا صحیح خیال نہ رکھا جائے تو ورزش کے دوران پسینہ زیادہ خارج ہونے سے ڈی ہائیڈریشن کا خدشہ ہوتا ہے،جس سے گردے بھی متا ثر ہوسکتے ہیں۔
– اگر خوراک توازن اور صحیح نہ رکھی جائے تو اس سےباڈی بلڈنگ میں بعض ایسی ورزشیں ہیں جو سر انجام دینے سے جوڑوں کے امراض بھی پیدا ہوتے ہیں ۔
آج کل کے باڈی بلڈرز کو نامور اور تجربہ کار باڈی بلڈرز کے طریقہ کار اور اصولوں کو اپنانا چاہئیے۔اس کے لئے آپ کو بہترین طریقہ کار اور جدید ٹیکنالوجی کے مطابق اپنے جسمانی نظام کو بہتر کرنا ہوگا۔