سبز چائے آپ کیلئے کتنی فائدہ مند اور کتنی نقصان دہ؟

سبز چائے آپ کیلئے کتنی فائدہ مند اور کتنی نقصان دہ؟

سبز چائے کی افادیت بہت زیادہ ہے کیوں کہ یہ اینٹی آکسیڈینٹس سے بھر پور ہوتی ہے جو ہماری صحت کے لئے بہت مفید ثابت ہوتے ہیں۔ در اصل اینٹی آکسیڈینٹس جسم میں اضافی آکسیجن کے نتیجہ میں بننے والے فری ریڈیکلز کو تباہ کرتے ہیں جو کہ بصورتِ دیگر خلیئوں کو نقصان پہنچانے کا سبب بن سکتے ہیں۔ اسی لحاظ سے یہ جسم کو کئی طرح کے مختلف کینسر سے بچانے کا باعث بھی بنتی ہے۔ سبز چائے میں پولی فینولز نامی کیمیائی مادے بھی ہوتے ہیں جو کہ جسمانی سوزش کو کم کرنے میں معاونت کرتے ہیں۔
سبز چائے میں چند معدنیا ت بھی ہوتی ہیں جو کہ ہماری صحت کیلئے فائدہ مند ہیں۔ تاہم سبز چائے خریدتے وقت کسی معیاری کمپنی کا انتخاب کریں وگرنہ غیر معیاری سبز چائے میں فلورائیڈ کی اضافی مقدار موجود ہو سکتی ہے اور کسی بھی غذائی جز کی زیادتی جسم میں زہریلے مواد یعنی ٹوکسنز کے بننے کا سبب بن سکتی ہے۔
سبز چائے میں کیفین کی موجودگی کے باعث یہ نیند بھگانے اور آپ کو چاق و چو بند رکھنے کا باعث بھی بنتی ہے۔ علاوہ ازیں یہ نظامِ انہضام میں تیزی لانے کا سبب بھی بنتی ہے۔ مزید براں سبز چائے ذہنی بیماری الزائمر سے بھی بچاتی ہے جس میں یادداشت کو شدید نقصان پہنچتا ہے۔ اس کے ساتھ ہی ساتھ سبز چائے حافظہ بڑھانے کے لئے بھی اہم کردار ادا کرسکتی ہے۔
تحقیق کے مطابق سبز چائے منہ کی بدبو دور کرنے میں بھی معاونت کر سکتی ہے۔ اس کے علاوہ ذیابیطس کے مریضوں کے لئے بھی سبز چائے مفید پائی گئی ہے کیوں کہ یہ خون میں شوگر کی سطح میں کمی لانے کا سبب بنتی ہے۔ مزید یہ کہ سبز چائے خون میں کولیسٹرول کی مقدار میں کمی بھی لاتی ہے۔
تحقیق کے مطابق سبز چائے جسمانی چربی کو گھٹانے میں بھی مدد کرتی ہےجس کے ذریعے آپ موٹاپے سے چھٹکا را حاصل کرسکتے ہیں۔ مزید یہ کہ اس میں کوئی کیلوریز موجود نہیں ہوتیں ۔ تاہم اس حوالے سے کوئی خاص نتائج دیکھنے میں نہیں ملتے ۔
سبز چائے چنبل اور سر میں موجود خشکی اور سکری دور کرنے کے لئے بھی فائدہ مند ہے۔
بعض لوگ استعمال شدہ سبز چائے کے ٹی بیگز کو فریج میں ٹھنڈا کر کے انہیں آنکھوں پر بھی لگاتے ہیں کیوں کہ یہ سیاہ حلقوں کو دور کرنے میں معاون پائے گئے ہیں ۔
اگرچہ سبز چائے آپ کی صحت کے لئے بے حد مفید ہے تاہم کسی بھی چیز کی زیادتی آپ کے لئے نقصان کا باعث بن سکتی ہے۔ اسی لئے سبز چائے کا محدود استعمال کریں ۔ کیفین کی موجودگی اگرچہ نیند کو رفع کرتی ہے اور اس سے آپ کو چستی محسوس ہوتی ہے تاہم کیفین کی جسم میں زیادہ مقدار میں موجودگی جسم سے آئر ن کے ذخائر کو ختم کرنے کا باعث بنتی ہے جس کے نتیجہ میں آپ بلا وجہ کی تھکاو ٹ ، جلد کی زرد رنگت ا ور انیمیا یعنی خون کی کمی کا شکار ہوسکتے ہیں۔
لہٰذا ایک دن میں ایک سے دو کپ کیفین کا استعمال آپ کے لئے مفید مگر اس سے زیادہ خطرےکا باعث ہے۔