کیا ایک میڈیکل سٹور والے آدمی اور ایک فارماسسٹ میں کوئی فرق نہیں؟

کیا ایک میڈیکل سٹور والے آدمی اور ایک فارماسسٹ میں کوئی فرق ہے ؟

فارماسسٹ جس کو ہم عام طور پر میڈیکل اسٹور والا سمجھتے ہیں، ہیلتھ کیئر سسٹم میں اہم مقام رکھتا ہے۔ پاکستان میں فارمیسی کے شعبے کو خاص اہمیت حاصل ہےمگر وہاںکام کرنے والے فارماسسٹ کے لیے اس ملک میں روزگار کے مواقع نہ ہونے کے برابر ہیں۔اس کی وجہ لوگوں کا علم ہونا ہے۔فارماسسٹ کے فرائض میں مریض کو صحیح ادویات کی فراہمی شامل ہے وہ نہ صرف درست ادویات کی فراہمی کو یقینی بناتا ہے۔بلکہ ان کے بارے میں تمام ضروری ہدایات بھی مریض کو فراہم کرتا ہے ایک ڈاکٹر مرض کی تشخیص کرتا ہے جبکہ ایک فارماسسٹ علاج کے لیے ادویات کے درست استعمال کو یقینی بناتا ہے ترقی یافتہ ممالک میں فارماسسٹ کو خاص مقام حاصل ہے مگر ہمارے ملک میں فارماسسٹ کو اس کے حقوق سے محروم رکھا جاتا ہے۔جس سے نہ صرف ان کا بلکہ مریضوں کا بھی نقصان ہوتا ہے ۔دوا کے غلط استعمال سے ہونے والی اموات کی شرح میں بھی اضافہ ہورہا ہے۔ اس لیے اب یہ امر اور ضروری ہوگیا ہے کہ جلد از جلد فارماسسٹ کی اہمیت کو تسلیم کیا جائے اور ان کےلیےروزگار کے مواقع پیدا کیے جائیں۔
حکومت ہسپتالوں میں ہر پچاس بستر پر ایک فارماسسٹ کی تقرری کو یقینی بنائے کیونکہ اب درست ادویات کا شعور نہ ہونے کی وجہ سے مریضوں کا معیار زندگی متاثر ہو رہا ہے۔اس کے علاوہ میڈیکل اسٹور پر بھی فارماسسٹ کی موجودگی کو یقینی بنایا جائے تاکہ ادویات کی ترسیل کا عمل شفاف ہو سکے اس کے علاوہ ملک میں ادویات بنانے والی فیکٹریاں قائم کی جائیں تاکہ زیادہ سے زیادہ لوگوں کو روزگار کے مواقع فراہم کیے جاسکیں۔
ہر سال عالمی یومفارماسسٹ منایا جاتا ہے اس کا مقصد صرف اور صرف شعبہ فارماسسٹ سے متعلقہ افراد کی اہمیت کو اجاگر کرنا ہے ۔اگر بات کی جائے مرض کی تشخیص کی تو اس امر میں جسطرح ڈاکٹر کی بہت زیادہ اہمیت ہے اسی طرح ادویات کی صحیح فراہمی میں فارماسسٹ حضرات بھی کسی سے کم نہیں ہیں ۔
اسی طرح دوا اور فارماسسٹ کا آپس میں گہرا تعلق ہے ۔ہر چیز کی ضرورت سے زیادہ کمی اور زیادتی انسان کو خطرناک مراحل سے گزرنے پر مجبور کر دیتی ہے اسی طرح ادویات کا صحیح علم رکھنےوالے فارماسسٹ اس وجہ سے اہمیت کے حامل ہیں کیونکہ وہ ادویات کو استعمال کرنےکے مرحلے کو بہتر طریقے سے سمجھتے ہیں۔ ادویات کے فوائدو نقصانات سے لے کر ان کی مقدارکو ایک فارماسسٹ ہی بہتر طریقے سے سمجھ سکتاہے۔ دوا اور مریض کے درمیان ایک فارماسسٹ کا ہونا بہت ضروری ہے۔ہم آج بھی ترقی یافتہ ممالک کی فہرست میں شامل نہیں ہوسکے کیونکہ ہم میڈیکل جیسے عظیم شعبے سے منسلک حضرات کو ان کی اہمیت سے آج تک محروم رکھتے آئے ہیں ۔اس وجہ سے آئے روز اموات بجائے کم ہونے کے الٹا بڑھ رہی ہیں ۔یہ امر انتہائی ضروری ہے کیونکہ یہ انسانی زندگی کا سوال ہے اور انسانی زندگی سے بڑھ کر کچھ نہیں۔